بین الاقوامی شہرت یافتہ ڈیزائنر، برگر بیچتے بیچتے ’ایچ ایس وائے‘ کیسے بنا ؟


پاکستانی معروف فیشن ڈیزائنر حسن شہریار یاسین المعروف ایچ ایس وائے نے انکشاف کیا ہے کہ وہ بہت چھوٹی عمر ہی سے اپنے اخراجات خود اٹھانا شروع ہو گئے تھے، وہ جس بھی مقام پر ہیں بہت محنت سے پہنچے ہیں۔

فیشن ڈیزائننگ کے بعد شوبز انڈسٹری میں بھی کامیاب انٹری دینے والے ایچ ایس وائے کے ماضی نے سب کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔

حال ہی میں ایک انٹرویو کے دوران ایچ ایس وائے نے جہاں اپنے ڈراموں، نئی فلم ’عشرت، میڈ ان چائنا‘ اور دیگر پروجیکٹس سے متعلق بات کی ہے وہیں انہوں نے اپنے بے سہارا، تلخ ماضی سے لے کر ڈیزائنر تک کے سفر سے متعلق بھی بتایا ہے۔

ایس ایچ وائے کا بتانا ہے کہ ’وہ 14 سال کی عمر ہی سے اپنے اخراجات اٹھانے کے لیے محنت مزدوری کرنے لگ گئے تھے جس میں برگر بیچنا بھی شامل تھا، وہ سنگل پیرنٹنگ (علیحدگی کے بعد والد یا والدہ میں سے کسی ایک کا بچے کو پالنا) میں بڑے ہوئے ہیں۔‘

انہوں نے کہا کہ ’برگر بیچنے کے ساتھ انہوں نے اسی دوران لائبریری میں بھی ملازمت کی تھی۔‘

ایچ ایس وائے کا مزید کہنا تھا کہ ’انہوں نے اپنی کمائی سے بچائے ہوئے چند ہزار روپوں سے کاروبار شروع کیا تھا، انہوں نے کلوتھنگ برانڈ ’ایچ ایس وائے‘ کی بنیاد محض 25 ہزار کی مدد سے رکھی تھی جو کہ پاکستان کا معروف ترین برانڈ بن چکا ہے ۔‘

حسن شہریار یاسین کا اپنے انٹرویو کے دوران بتانا تھا کہ ’انہوں نے آج تک زندگی میں ہر کام صفر سے شروع کیا ہے چاہے وہ اداکاری، میزبانی کا پیشہ ہو یا پھر فیشن ڈیزائننگ کا کاروبار۔‘ّ




Source link

About Daily Multan

Check Also

اُروشی روٹیلا نے ریشبھ پنت کے معاملے پر خاموشی توڑ کر سب کچھ واضح کردیا

فائل فوٹو بھارتی اداکارہ و رقاصہ اُروشی روٹیلا نے بھارتی کرکٹر ریشبھ پنت کے ساتھ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *