صوبائی کابینہ کے اجلاسوں کی نصف سنچری مکمل ، وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار نے تاریخی فیصلوں کی منظوری دے دی 

صوبائی کابینہ کے اجلاسوں کی نصف سنچری مکمل ، وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار نے …

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت وزیراعلیٰ آفس میں پنجاب کابینہ کا 50واں اجلاس منعقد ہوا،جس  میں پنجاب میں یونیورسل ہیلتھ انشورنس پروگرام پر عملدرآمد کی منظوری دی گئی،نیا پاکستان صحت کارڈ کا اجراءجنوری سے کرنے کافیصلہ کیا گیا۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیا پاکستان صحت کارڈ کااجراءجنوری کے آغاز میں لاہور ڈویژن سے کیا جائے گا،31مارچ تک نیا پاکستان صحت کارڈ راولپنڈی،فیصل آباد،ملتان،بہاولپور،گوجرانوالہ اورسرگودھا ڈویژن میں بھی لانچ کر دیا جائے گا-کابینہ نے نیا پاکستان صحت کارڈ پر کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ اور خاندان کے سربراہ کا نام کنندہ کرنے کی منظوری دے دی۔کابینہ نے پنجاب ہیلتھ اینشیٹو مینجمنٹ کمپنی او رسٹیٹ لائف انشورنس کے درمیان معاہدے کی بھی منظوری دے دی ۔کابینہ نے نیا پاکستان صحت کارڈ کے فارمیٹ اور ڈیزائن کی بھی منظوری دے دی ،یونیورسل ہیلتھ انشورنس پروگرام پر تین برس میں تقریباً 400ارب روپے خرچ کئے جائیں گے۔

وزیراعلیٰ نے کہاکہ یونیورسل ہیلتھ انشورنس پروگرام تحریک انصاف کی حکومت کا تاریخ ساز فلاحی اقدام ہے،نیا پاکستان صحت کارڈکے ذریعے ہرخاندان 10لاکھ روپے تک سالانہ مفت علاج کی سہولت میسر ہوگی۔پنجاب کابینہ نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی قیادت میں یونیورسل ہیلتھ انشورنس پروگرام پر عملدرآمد کرنے پر صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد اور ان کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کیا۔یونیورسل ہیلتھ انشورنس پروگرام کے لئے ہسپتالوں کے علیحدہ پرسنل لیجر اکاؤنٹ کھولنے اور رسیدشیئر ڈسٹری بیوشن فارمولے کی منظوری دی گئی۔

پنجاب کابینہ نے صوبے میں سرمایہ کاری کے فروغ اورکاروبار میں آسانیاں پیدا کرنے کے لئے ایک اورانقلابی اقدام این او سیز کے اجراءکو آسان بنانے کے لئے زیرو ٹائم ٹو سٹارٹ اپ پالیسی 2021ء کے مسودے کی منظوری دی، اس پالیسی کے تحت صوبے میں کاروبار اور سرمایہ کاری بڑھانے کے لئے این اوسی رجیم کو سہل بنایا جائے گا۔سکندر یہ کالونی، سوڈیوال لاہور میں 34 کنال اراضی پر سٹیٹ آف دی آرٹ گرلز کالج کے قیام کی منظوری دی گئی ۔ویسٹ پاکستان بورڈ آف ریونیو(کنڈکٹ آف اپیلز اینڈ ریویزنز) رولز 1959ءمیں ترامیم کی منظوری دی گئی۔ویسٹ پاکستان بورڈ آف ریونیو(کنڈکٹ آف اپیلز اینڈ ریویزنز) رولز 1959ءکا نام پنجاب بورڈ آف ریونیو (کنڈکٹ آف اپیلز اینڈ ریویزنز) میں تبدیل کردیا جائے گا،ترامیم کی منظوری سے بورڈ آف ریونیو میں کیسوں کافیصلہ 180دن میں کرنا لازم ہوگا۔ویسٹ پاکستان بورڈ آف ریونیو(کنڈکٹ آف میٹنگز) رولز 1959 ءمیں ترامیم کی منظوری دی گئی۔پنجاب سیڈ کارپوریشن میں کارپوریٹ گورننس اصلاحات متعارف کرانے کافیصلہ کیا گیا۔پنجاب سیڈ کارپوریشن میں کارپوریٹ گورننس اصلاحات متعارف کرانے کےلئے پنجاب سیڈ کارپوریشن ایکٹ 1976ء میں ترامیم کی منظوری دی گئی،ترامیم کے بعد کارپوریشن کے بورڈ ممبرز کی تعداد نو  سے بڑھا کر 16کر دی جائے گی۔پنجاب موٹر وہیکلز ٹیکسیشن رولز 1959ء میں ترامیم کی منظوری دی گئی ،ان ترامیم سے پنجاب میں رجسٹرڈ گاڑیاں پنجاب کے اندر ہی ٹوکن ٹیکس ادا کرنے کی پابند ہوںگی۔

کابینہ اجلاس میں یونیورسل رجسٹریشن مارکس سکیم کے تحت لاہور ہائی کورٹ کی سرکاری گاڑیوں کی رجسٹریشن کےلئے ’ایل ایچ سی‘سیریزالاٹ کرنے کی منظوری دی گئی، پنجاب موٹر وہیکلز رولز 1969ء کے سیکنڈ شیڈول کے رول 42میں ترمیم کی منظوری دی گئی،ترمیم سے پنجاب میں الیکٹرک گاڑیوں کی رجسٹریشن پر خصوصی رعائت دی جائے گی۔گاڑیو ں کے پر کشش نمبروں کی الاٹمنٹ کے لئے ای آکشن پالیسی کو مزید موثر بنانے کی منظوری دی گئی،پرکشش نمبروں کی الاٹمنٹ کے لئے فہرست میں مزید نمبروں کا اضافہ کیاجائے گا۔

گندم ریلیز پالیسی 2021-22ء کی منظوری دی گئی-پرائس کنٹرول کرنے اور منافع خوری و ذخیرہ اندوزی پر قابو پانے کے لئے 1977ءکے ایکٹ کو اختیار کرنے اورپرائس کنٹرول اینڈ پریونشن آف پرافٹٹرینگ اینڈ ہورڈنگ ایکٹ 2021ء کے مسودے کی منظوری دی گئی۔اجلاس میں سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو بابر حیات تارڑ کے والد کے انتقال پر افسوس کااظہارکیا گیا اور مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی۔ صوبائی وزراء، معاونین خصوصی، مشیران، چیف سیکرٹری،متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز اور اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ 

مزید :

علاقائیپنجابلاہور




Source link

About Daily Multan

Check Also

وزیر اعلیٰ پنجاب کا 100 یونٹ  تک استعمال کرنے والے گھریلو صارفین کیلئے بجلی مفت کرنے کا اعلان 

وزیر اعلیٰ پنجاب کا 100 یونٹ  تک استعمال کرنے والے گھریلو صارفین کیلئے بجلی … …

Leave a Reply

Your email address will not be published.