ن لیگ 28 دن انتظار کرلیتی تو آئینی بحران نہ ہوتا: پرویز الہٰی

—فائل فوٹو

اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کا کہنا ہے کہ پنجاب میں آئینی بحران آ چکا ہے، اگر ن لیگ والے 28 دن انتظار کرلیتے تو آئینی بحران نہ ہوتا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی نے کہا کہ کچھ دنوں کے بعد خبر کچھ اور ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ وزارتِ اعلیٰ کا امیدوار تو میں تھا، حمزہ شہباز وزیرِ اعلیٰ نہیں ہیں، حمزہ شہباز کے کہنے پر مجھ پر تشدد کیا گیا جس سے میں بے ہوش ہو گیا۔

پرویز الہٰی نے کہا کہ وزیرِ اعلیٰ کا الیکشن متنازع نہیں بلکہ الیکشن ہوا ہی نہیں، اسمبلی کی کارروائی کو روکا گیا، جہاں ووٹ کاسٹ کرنے تھے وہاں پولیس آ گئی تھی۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ پولیس جوتے پہن کر ہاؤس میں داخل ہوئی، ایوان ہمارے لیے مقدس ہے، گورنر وفاق کا نمائندہ ہے، ان کے ساتھ جو کیا گیا اس پر صدر خاموش نہیں رہیں گے۔

اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کا یہ بھی کہنا ہے کہ رات کو چیف سیکریٹری اور آئی جی نے گورنر ہاؤس پر قبضہ کیا، یہ معاملہ خود دیکھوں گا۔




Source link

About Daily Multan

Check Also

فنکشنل لیگ سندھ کونسل کا اجلاس، صدر الدین راشدی صدر، سردار رحیم جنرل سیکریٹری منتخب

پاکستان مسلم لیگ فنکشنل سندھ کونسل نے انٹرا پارٹی الیکشن میں 3 سال کے لیے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *