گلستان جوہر میں غلط کاری کے نام پر مردوں کا فلیٹ پر دھاوا، خواتین پر تشدد، پولیس خاموش


کراچی کے شارع فیصل تھانے کی حدود گلستان جوہر بلاک 16 کے رہائشی اپارٹمنٹس نعمان سٹی میں مبینہ طور پر مکینوں نے غلط کاری کا الزام عائد کر کے ایک فلیٹ پر دھاوا بول کر خواتین کو تشدد کا نشانہ بنایا۔

نعمان سٹی کی مکین خاتون کے ایک فلیٹ میں گھس گئے، خواتین کے ساتھ بدسلوکی اور گالم گلوچ بھی کی۔

اس حوالے سے مکینوں کا مؤقف ہے کہ پولیس کو علاقے میں چلنے والے تمام فحاشی، منشیات اور گٹکا ماوا کے اڈوں کا نہ صرف علم ہے بلکہ علاقہ پولیس ان اڈوں کے خلاف کارروائی نہیں کرتی۔

اس دوران کسی نے آواز لگائی کہ انہیں پولیس کے حوالے کریں گے تو یہ سب بولیں گے مگر دوسرا مرد کہتا ہے کہ انہیں پولیس کے حوالے کیوں کریں گے۔ 

اس دوران ایک لڑکی خود پر تشدد کرنے سے منع کرتی ہے اور وہ بات کرنے کا کہتی ہے تو وہ مرد اسے مزید تشدد کرتے ہوئے گالیاں بکتا ہے۔

خواتین اپنا چہرہ چھپاتی ہیں تو مرد ان کے چہرے سے زبردستی نقاب ہٹواتے ہیں جبکہ وہاں موجود خواتین پر تشدد کے دوران ویڈیو بھی بنائی جاتی رہی۔

یہ تو معلوم نہیں ہوسکا کے یہ واقعہ کب پیش آیا مگر سوشل میڈیا پر گزشتہ رات کے حوالے سے یہ بھی اطلاعات ہیں کہ وہاں پر موجود خواتین کی مبینہ طور پر برہنہ وڈیوز بھی موبائل فونز سے بنائیں گئیں۔

فلیٹ میں داخل ہونے والے افراد خواتین کو بدترین تشدد کا نشانہ بناتے رہے، جبکہ اسی سلسلے میں رابطہ کرنے پر شارع فیصل پولیس نے لاعلمی ظاہر کی۔




Source link

About Daily Multan

Check Also

اعظم سواتی کیخلاف مقدمات، عدالت کا ڈپٹی اٹارنی جنرل کو سیکریٹری داخلہ سے ہدایات لینے کا حکم

فائل فوٹو اسلام آباد ہائی کورٹ نے اعظم سواتی کے خلاف درج مقدمات پر ڈپٹی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *