“یہ لانگ شوز اور ترچھی ٹوپی پہن کر بڑے بڑے دعوے کرتے ہیں”فرخ حبیب نے شہباز شریف کو آڑے ہاتھوں لے لیا

“یہ لانگ شوز اور ترچھی ٹوپی پہن کر بڑے بڑے دعوے کرتے ہیں”فرخ حبیب نے شہباز …

فیصل آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر مملکت اطلاعات و نشریات میاں فرخ حبیب نے کہا کہ شہباز شریف بڑے بڑے لانگ شوزاور سر پر ترچھی ٹوپی پہن کر یہ دعوی کرتے پھرتےہیں کہ اُنہوں نےایک دھیلے کی کرپشن نہیں کی مگرموصوف نےجعلی بینک اکاونٹس کےذریعےاربوں روپے کی منی لانڈرنگ کی، صرف ایک کیس میں ان کی 16  ارب روپے کی چوری پکڑی گئی ہے ،ان کے خاندان کی ملکیتی رمضان شوگر ملز چنیوٹ کے چوکیداروں، مالیوں، چپڑاسیوں،سیکیورٹی گارڈز اور ایسے ہی معمولی معمولی ملازمین جن کی ماہانہ تنخواہ کسی طرح بھی15 بیس ہزار سے زائدنہیں ان کےاکاونٹس سےکئی کئی کروڑ اور کئی کئی ارب روپےنکل رہے ہیں،شہبازشریف کو ادھر ادھر ٹامک ٹوئیاں مارنے کی بجائے اپنی منی لانڈرنگ کا حساب دینا ہوگا کیونکہ قوم حقائق جاننا چاہتی ہے ،ملک میں قومی خزانہ لوٹنے والے چوروں، ڈاکوں، لٹیروں کیلئے معافی کی کوئی گنجائش نہیں اور ان کا ٹھکانہ با لآخر جیل ہی ہے ۔

 دا دنگر وارث پورہ فیصل آبادمیں مسیحی برادری کی جانب سے کرسمس کا کیک کاٹنے کی تقریب سے خطاب کرتےہوئےوزیرمملکت نےکہاکہ ماضی کےحکمرانوں نےنہ صرف ملک میں اندھا دھند لوٹ مار کی، قوم کا خزانہ ناجائز ذرائع و منی لانڈرنگ اور جعلی اکاونٹس کے ذریعے باہر بھیجا،اپنے کاروبار با ہر منتقل کئے،اپنے محلات بنائے بلکہ اس کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں پاکستان کی بدنامی بھی کروائی لیکن وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں حکومت وطن عزیز کی کھوئی ہوئی ساکھ بحال کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے ،جس کی تازہ ترین مثال اسلام آباد میں او آئی سی کے پلیٹ فارم پر منعقد ہونیوالی دنیا بھر کے او آئی سی کے رکن مسلم ممالک کے وزرائے خارجہ کی کانفرنس ہے جس میں تمام اہم مسلم ممالک کے وزرائے خارجہ اور ان کے وفود شرکت کررہے ہیں جو ان کے پاکستان پر اعتماد کا مظہر ہے جس پر وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی خصوصی طور پر مبارکباد کے مستحق ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس کے انعقا د کا اہم مقصد یہ ہے کہ چونکہ موسم تیزی سے تبدیل ہورہا ہے اور سردی کی شدت میں اضافے کے باعث  افغان عوام سخت مشکلات کا شکار ہیں، اسلئے اس کانفرنس کے ذریعے نہ صرف امت مسلمہ بلکہ عالم اقوام کی توجہ اس جانب مبذول کروائی جائے گی کہ وہ افغان عوام کی مدد کریں ۔ فرخ حبیب نے کہا کہ حکومت شہریوں کو تمام ممکن ریلیف کی فراہمی کیلئے کوشاں ہے،خصوصی طور پر اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والے بھائیوں کو بنیادی سہولیات و مراعات کی فراہمی کیلئے بھرپور اقدامات کئے جارہے ہیں،ان کیلئے نہ صرف ملازمتوں کے کوٹہ میں اضافہ کیا گیا ہے بلکہ ان کے علاقوں کی تعمیر و ترقی کیلئے خصوصی گرانٹس بھی مختص کی گئی ہیں،مسیحی بھائی ہمارے لئے انتہائی قابل احترام ہیں،اس لئے ان کی کرسمس کی خوشیوں میں شریک ہونا ہمارے لئے باعث عزت ہے۔

وزیرمملکت نےکہا کہ مسلمانوں کی جانب سے مسیحی بھائیوں کی تقریبات میں بھرپور شرکت اس بات کا اعلان ہے کہ ہم سب ایک تھے، ایک ہیں اور ایک رہیں گے،  حکومت کی جانب سے مسیحیوں کیلئے کرسمس کے حوالے سےبھی گرانٹ مختص کی گئی ہے تاکہ انہیں تحائف فراہم کرکے سب مسیحی بھائیوں کو کرسمس کی خوشیوں میں شریک کیا جا سکے۔

وزیر مملکت نےکہا کہ حکومت نے پاکستان کے حالات ٹھیک کرکے ملک کو مثبت و درست سمت پر گامزن کردیا ہے اسلئے آج ہم سب مل کر اس عزم کا اظہار کرتے ہیں کہ ملک کی ترقی کے سفر کو جاری رکھنے میں حکومت کا بھرپور ساتھ دیں گے کیونکہ ہم نے ہی ملک کو آگے لیکر جانا ہے،حکومت کی موثر پالیسیوں کی وجہ سے جہاں زرعی و غذائی اجناس کی ریکارڈ پیداوار ہورہی ہے وہیں اشیائے ضروریہ خصوصا سبزیوں وغیرہ کی قیمتیں بھی تیزی سے نیچے آرہی ہیں یہی نہیں بلکہ آلو، پیاز، ٹماٹر وغیرہ کی قیمتیں اس سال گزشتہ سال کی نسبت بہت کم ہیں نیز عالمی سطح پر بھی کورونا سے متاثرہ مارکیٹوں میں استحکام آنا شروع ہوگیاہے،جوں جوں عالمی منڈی میں قیمتیں کم ہوتی جائیں گی ہم بھی قیمتوں میں کمی لاتے جائیں گے جس کی تازہ مثال پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پہلے عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں بڑھیں مگر ہم نے اپنا17 فیصد سیلز ٹیکس اور پٹرولیم لیوی کم کرکے عوام کو تمام ممکن ریلیف دیا،جس حساب سے قیمتیں بڑھیں، اس تناسب سے بوجھ عوام پر پاس آن نہیں کیا ، جوں جوں مزید کمی ہوئی ہم بھی عوام کو ریلیف دیتے جائیں گے۔ فرخ حبیب نے کہا کہ سابق حکمرانوں نے تین تین بار حکومت کرنے کی باریاں لیں لیکن وہ بتائیں کہ اب جو وہ حکومت پر تنقید کررہے ہیں، انہوں نے اپنے تیس سالہ دور میں کہاں دودھ کی نہریں بہائی ہیں؟ انہوں نے عوام کیلئے کام کی بجائے اپنا دھیان لوٹ مار، اپنی فیکٹریوں پر فیکٹریاں لگانے، منی لانڈرنگ، کاروبار، جائیدادوں اور اولادوں پر مرکوز رکھا لیکن ان کے برعکس عمران خان کا سارا دھیان اپنے عوام کی جانب ہے۔

وزیر مملکت نے کہا کہ اگر سابق حکمرانوں نے مہنگی بجلی کے معاہدوں کے ذریعے اربوں کے کک بیکس لینے کی بجائے پانی سے سستی بجلی بنانے کی جانب اور زراعت کی ترقی کی طرف توجہ دی ہوتی تو آج ہمیں ان مشکلات کا سامنا نہ ہوتا ، اللہ کے فضل اور حکومتی کوششوں سے اب ہم فوڈ میں سرپلس ہونے جارہے ہیں ،اس سال ہمیں کاٹن، گندم، چینی باہر سے امپورٹ نہیں کرنی پڑے گی،پہلے چینی مافیا اور سابق حکمرانوں کے گٹھ جوڑ سے چینی کی قیمت 150 روپے تک پہنچ گئی تھی مگر حکومت نے اس انتہائی بااثر شوگر  مافیاسے بلیک میل ہونے کی بجائے ان کو لگام ڈالی جس کی وجہ سے چینی کی ایکس مل قیمت 80 سے82 روپے فی کلو اور پرچون قیمت 90 روپے کے قریب ہے، چونکہ گنے کا کرشنگ سیزن شروع اور نئی چینی بننے کا عمل تیز تر ہوگیا ہے لہذا آنیوالے دنوں میں چینی کی قیمتوں میں مزید کمی بھی آئے گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے گندم اور دیگر زرعی اجناس کے کاشتکاروں کو بہترین امدادی قیمت دی جس کے ساتھ ساتھ وزیر اعظم کے 300 ارب روپے کے زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت انہیں سبسڈیز کی فراہمی کا سلسلہ بھی شروع کیا گیا جس کے شاندار نتائج حاصل ہوئے، اب بھی آٹا 1100 روپے من دستیاب ہے جبکہ اس کے برعکس سندھ میں حالت انتہائی ابتر ہوچکی ہے جہاں حکمرانوں کے پروردہ مافیاز عوام کا خون چوسنے میں مصروف ہیں، یہ وزیراعظم ہی ہیں جنہوں نے کسان کا سوچا اور جو سوچا اس پر عمل بھی کرکے دکھایا۔

فرخ حبیب نےکہاکہ ہم ہرسال تقریبا300 ارب روپےکاخوردنی تیل باہرسےامپورٹ کرتےہیں لیکن اب ہم نےاپنی کوکنگ آئل اورتیل داراجناس کی ملکی ضرورت پوری کرنےکیلئےزیتون کی کاشت شروع کی ہے،بنجر زمینوں کو آبادکرنےکےساتھ ساتھ کوسٹل بیلٹ میں پام آئل کی پیداوارحاصل کرنےکیلئےپام ٹریز لگائےجارہےہیں،وزیراعظم کو عوام کی چھوٹی سےچھوٹی تکلیف کابھی احساس ہے،اسی لئے ذخیرہ اندوزوں اور ناجائز منافع خوروں و گرانفروشوں کےخلاف پوری طاقت سےکریک ڈاون جاری ہےاورنہ صرف ذخیرہ کی گئی اجناس برآمد کرکے سرکاری نرخوں پر فروخت کروائی جارہی ہیں بلکہ ذمہ داران کے خلاف مقدمات کا اندراج بھی کروایا جارہا ہےلیکن سندھ میں ایسا کوئی کام سامنے نہیں آرہا۔

انہوں نےکہاکہ آج کاوزیراعظم چورنہیں بلکہ آج تک ملکی تاریخ میں ان جیساعوام کاخیرخواہ حکمران سامنےنہیں آیاجس نےڈٹ کرمشکلات کا سامنا کیا اور اب بھی کررہے ہیں لیکن ان کا مقصد عوام کیلئے سہولیات پیدا کرنا ہے۔فرخ حبیب نے کہا کہ ہماری اولین ترجیحات میں اعلی تعلیم کی فراہمی بھی سر فہرست ہے لہذا ہم نے اپنے بچوں کی اعلی تعلیم کیلئے 50 ارب کے سکالر شپس رکھے ہیں تاکہ کوئی ذہین بچہ وسائل نہ ہونے سے تعلیم سے محروم نہ رہے اسی طرح پنجاب کے تمام شہریوں کو رواں ماہ کے آخر سے ہیلتھ کارڈز کی فراہمی بھی شروع کی جارہی ہےجس سےاب کوئی بھی شہری لاعلاج نہیں  رہے گا اور ہر گھرانے کو دس لاکھ تک کا ہیلتھ کور حاصل ہوگا نیز کسانوں کو براہ راست سبسڈی کی فراہمی کیلئے کسان کارڈز اور صنعتی مزدوروں کو سوشل سکیورٹی کارڈز فراہم کئے جا رہے ہیں،عوامی خدمت کا یہ تسلسل آئندہ بھی جاری رہے گا۔ 

مزید :

علاقائیپنجابفیصل آباد




Source link

About Daily Multan

Check Also

حمزہ شہباز نے پنجاب کے تاجروں کو عید کا تحفہ دے دیا

حمزہ شہباز نے پنجاب کے تاجروں کو عید کا تحفہ دے دیا لاہور (ڈیلی پاکستان …

Leave a Reply

Your email address will not be published.